UC 4 Gulshan-e-Hadeed: JI sees rigging as PPP ‘wins’ after recounting

کراچی: جماعت اسلامی کراچی کے امیر انجینئر حافظ نعیم الرحمن نے سندھ میں پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت پر \’فسطائیت\’ اور انتخابی عمل کا مذاق اڑانے کا الزام لگایا ہے۔

ادارہ نور حق میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے گلشن حدید کی یونین کونسل 4 میں بیلٹ پیپرز کی دوبارہ گنتی کے دوران ریٹرننگ افسر اور ڈسٹرکٹ ریٹرننگ افسر پر دھاندلی کا الزام لگایا۔ انہوں نے الزام لگایا کہ ڈی آر او اور آر او نے پیپلز پارٹی سے وفاداری کا اظہار کیا کیونکہ بیلٹ بیگز پہلے سے پھٹے ہوئے پائے جانے کے باوجود دوبارہ گنتی کی گئی۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ افسران باقی بیلٹ پیپرز کا ڈیٹا فراہم کرنے میں ناکام رہے۔

انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی نے 165 ووٹوں سے جیتی یوسی پیپلز پارٹی کو 53 ووٹوں کے جعلی مارجن سے پیش کی گئی کیونکہ صرف وہی ووٹ مسترد ہوئے جو جماعت اسلامی کے حق میں ڈالے گئے تھے۔

انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی الیکشن کمیشن آف پاکستان سے دوبارہ گنتی کے نام پر پوسٹ پول دھاندلی کی شکایت کرتی رہی لیکن بدقسمتی سے کمیشن اس بدعنوانی کا نوٹس لینے میں ناکام رہا۔

انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی پوسٹ پول دھاندلی کے خلاف \’فیصلہ کن دھرنا\’ دینے جا رہی ہے۔

کاپی رائٹ بزنس ریکارڈر، 2023



>Source link>

>>Join our Facebook page From top right corner. <<

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *