Indian shares decline amid rate fears, foreign selling

بنگلورو: ہندوستانی حصص جمعرات کو گر گئے، مالیاتی اور ٹیک اسٹاکس کی طرف سے گھسیٹا گیا، کیونکہ طویل عرصے سے بلند شرح حکومت کے خدشات کے درمیان غیر ملکی فروخت جاری رہی۔

نفٹی 50 انڈیکس 0.74% گر کر 17,321.90 پر آگیا، جبکہ S&P BSE سینسیکس 0.84% ​​گر کر 58,909.35 پر بند ہوا۔

بینچ مارکس نے بدھ کو آٹھ دن کے ہارنے کے سلسلے کو ختم کرنے کے بعد گزشتہ 10 میں سے نو سیشنز میں نقصانات درج کیے ہیں۔

13 بڑے سیکٹرل انڈیکسز میں سے گیارہ گر گئے جس میں اعلیٰ ویٹیج مالیات میں بالترتیب 0.85 فیصد اور انفارمیشن ٹیکنالوجی میں 1.26 فیصد کمی واقع ہوئی۔

IT انڈیکس کے 10 اجزاء میں سے نو کو نقصان ہوا، جس کی قیادت Tata Consultancy Services میں 1.90% اور Infosys میں 1.6% گر گئی۔

آئی ٹی سیکٹر میں یہ سلائیڈ، جو کہ ریاستہائے متحدہ سے اپنی آمدنی کا ایک اہم حصہ کماتا ہے، سرکاری اعداد و شمار میں خام مال کی قیمتوں میں اضافے کے بعد سامنے آیا ہے، جس سے افراط زر کی بلند سطح کا خدشہ بڑھ جاتا ہے جو بلند شرح حکومت کو طول دے سکتا ہے۔

اینٹیک اسٹاک بروکنگ کے تجزیہ کاروں کے مطابق، آئی ٹی کمپنیاں اگلے چند مہینوں میں کچھ پراجیکٹ کٹ بیکس دیکھ سکتی ہیں کیونکہ صارفین ٹیک اخراجات کو معقول بناتے ہیں۔

دریں اثنا، غیر ملکی پورٹ فولیو سرمایہ کاروں (FPIs) نے سال میں اب تک خالص 387.89 بلین روپے ($4.70 بلین) ہندوستانی ایکوئٹی فروخت کی۔

ہندوستانی حصص نے آٹھ دن کی ہار جیت لی

Profitmart Securities کے سربراہ، اویناش گورکشاکر نے کہا، \”غیر ملکی فروخت، کمائی میں مسلسل کمزوری اور خوردہ تعاون کی کمی کی وجہ سے لیکویڈیٹی میں کمی اگلے چند مہینوں تک مارکیٹوں پر دباؤ ڈالتی رہے گی۔\”

ماروتی سوزوکی انڈیا کی قیمت 2.46 فیصد گر گئی جب ملک کی سب سے بڑی کار ساز کمپنی نے مارچ میں الیکٹرانک پرزوں کی کمی کی وجہ سے پیداوار میں کمی کا انتباہ دیا۔

دوسری طرف، ریل وکاس نگم 200 وندے بھارت ٹرین سیٹ بنانے اور برقرار رکھنے کے لیے سب سے کم بولی لگانے والے کے طور پر ابھرنے کے بعد 12 فیصد سے زیادہ چڑھ گئی۔

میکروٹیک ڈیولپرز میں 20 فیصد اضافہ ہوا جب کمپنی نے تخمینہ لگایا کہ اس کی پری سیلز 20 فیصد کی اوسط سالانہ شرح نمو اور مالی سال 2026 تک 200 بلین روپے تک پہنچ جائے گی۔



>Source link>

>>Join our Facebook page From top right corner. <<

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *