پیرو کے سفیر پال ڈوکلوس جمعرات کو سیئول کے فور سیزنز ہوٹل میں کوریا میں پیرو کے یوم آزادی کی تقریب کے دوران خطاب کر رہے ہیں۔ (سنجے کمار/دی کوریا ہیرالڈ)

پیرو کا سفارت خانہ جنوبی کوریا کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کو اپ گریڈ کرنے کی کوشش کر رہا ہے، کیونکہ دونوں ممالک اس سال سفارتی تعلقات کی 60 ویں سالگرہ منا رہے ہیں۔

جمعرات کو ملک کے 202 ویں یوم آزادی کے موقع پر منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پیرو کے سفیر پال ڈوکلوس نے کہا کہ دونوں ممالک نے 2011 میں آزاد تجارتی معاہدے پر دستخط اور 2012 میں اسٹریٹجک شراکت داری کے قیام کے ذریعے بانڈز بنائے۔

انہوں نے کہا کہ اس طرح کی باضابطہ شراکتیں ٹیکنالوجی، اقتصادی ترقی، ماحولیاتی تحفظ، سماجی شمولیت، انفارمیشن اور کمیونیکیشن ٹیکنالوجی، دفاعی سلامتی اور صحت کی خدمات میں بڑھتے ہوئے تعاون کے پیچھے محرک قوتیں ہیں۔

2011 میں ایف ٹی اے کے نافذ ہونے کے بعد سے پیرو کوریا کی تجارت دوگنی ہو گئی ہے۔

27 جولائی کو سیول کے فور سیزنز ہوٹل میں پیرو کے 202 ویں یوم آزادی کی تقریبات کے استقبال کے دوران فنکار روایتی پیرو رقص پیش کر رہے ہیں۔ (سنجے کمار/دی کوریا ہیرالڈ)

27 جولائی کو سیول کے فور سیزنز ہوٹل میں پیرو کے 202 ویں یوم آزادی کی تقریبات کے استقبال کے دوران فنکار روایتی پیرو رقص پیش کر رہے ہیں۔ (سنجے کمار/دی کوریا ہیرالڈ)

دونوں ممالک نے 18 اپریل کو اپنے اپنے علاقوں کے درمیان اور اس سے باہر ہوائی خدمات کے لیے کوریا-پیرو کے معاہدے پر بھی دستخط کیے تھے۔

ڈوکلوس نے کہا کہ کوریا کے ساتھ پیرو کے تعلقات “مستقبل میں بڑھنے کے لیے مقدر ہیں۔”

بی اے پی یونین، پیرو کی بحریہ کے لیے ایک تربیتی جہاز، 10 سے 14 ستمبر تک بوسان کے ساحلوں کو گھیرے گا، ڈوکلوس نے دی کوریا ہیرالڈ کو بتایا۔ لمبا جہاز، ایک روایتی بحری جہاز، لاطینی امریکہ کے سب سے بڑے تربیتی جہازوں میں سے ایک ہے۔

انہوں نے کثیر المقاصد بحری جہازوں، بحریہ کے گشت اور تربیتی ہوائی جہازوں کی تیاری میں مشترکہ کوششوں کے ساتھ ساتھ فوجی صلاحیتوں کو تقویت دینے کے لیے تمام فوجی سطحوں پر تربیتی پروگرام تیار کرنے پر بھی روشنی ڈالی۔

پیرو کا یوم آزادی، جو 28 جولائی کو آتا ہے، 1821 میں ہسپانوی حکمرانی سے پیرو کی آزادی کی یاد مناتا ہے۔

سنجے کمار کی طرف سے (sanjaykumar@heraldcorp.com)



>Source link>

>>Join our Facebook Group be part of community. <<

By hassani

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *