کراچی: زونگ 4G نے PAGE (پاکستان الائنس فار گرلز ایجوکیشن) کے ساتھ اسٹریٹجک شراکت داری کا اعلان کیا ہے، جو کہ تعلیم، روزگار، حقوق اور قیادت میں صنفی مساوات کے لیے ایک سازگار ماحول پیدا کرنے کے لیے وقف ہے۔

مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) پر دستخط کی تقریب بدھ، 21 جون کو منعقد ہوئی، جس نے پاکستان میں لڑکیوں کی تعلیم کو بااختیار بنانے اور باہمی تعاون کے لیے دونوں اداروں کے عزم کو مستحکم کیا۔ تقریب میں Zong 4G اور PAGE دونوں کے نمائندوں نے شرکت کی۔

اس ایم او یو کے تحت، زونگ 4G اور PAGE پاکستان میں لڑکیوں کی تعلیم کے ماحول کو تبدیل کرنے کے اپنے مشترکہ مقصد کو حاصل کرنے کے لیے مل کر کام کریں گے۔ اس تعاون میں متعدد سرگرمیاں شامل ہوں گی، جن میں ٹرینرز کے ذریعے منعقد کی جانے والی ورکشاپس، محدود رسائی والے علاقوں میں انٹرنیٹ ڈیوائسز کی فراہمی، کیریئر کی تربیت کے اقدامات، سیلاب سے متاثرہ اسکولوں کی بحالی، اور خواتین کے پیشہ ورانہ مراکز میں ورکشاپس شامل ہیں۔

Zong 4G تعلیم میں صنفی فرق کو ختم کرنے کے اپنے مشن میں PAGE کی مدد کرنے کے لیے پرعزم ہے۔ زونگ 4G کے سرکاری ترجمان نے شراکت داری کے لیے اپنے جوش و خروش کا اظہار کرتے ہوئے کہا، “Zong 4G میں، ہم پختہ یقین رکھتے ہیں کہ تعلیم ترقی کی بنیاد ہے۔ PAGE کے ساتھ تعاون کرکے، ہم لڑکیوں کو بااختیار بنانے اور معیاری تعلیم تک مساوی رسائی کو یقینی بنانے کے لیے پرعزم ہیں۔”

Zong 4G اور PAGE اس سے قبل پیر چناسی، آزاد جموں و کشمیر میں ایک آزاد ڈیجیٹل لیب کی تشکیل جیسے متعدد اقدامات کے لیے شراکت کر چکے ہیں۔ یہ لیب بنیادی طور پر لڑکیوں کے اسکول میں قائم کی گئی ہے لیکن یہ علاقے کی خواتین کے لیے پیشہ ورانہ مرکز کے طور پر بھی کام کرتی ہے۔ لیب ایک دور افتادہ، دور افتادہ علاقے میں واقع ہے جہاں سڑکوں جیسے بنیادی ڈھانچے کا فقدان ہے۔ دسمبر 2022 میں قائم ہونے والی، ڈیجیٹل لیب پیر چناسی کے آس پاس کی سینکڑوں لڑکیوں اور خواتین کو سہولت فراہم کر رہی ہے۔

Zong 4G اور PAGE کے درمیان یہ اسٹریٹجک شراکت داری پاکستان میں لڑکیوں کی تعلیم کے لیے ایک روشن مستقبل بنانے کے لیے مشترکہ وژن اور عزم کو ظاہر کرتی ہے۔ اپنے اجتماعی وسائل، مہارت اور عزم کو بروئے کار لاتے ہوئے، دونوں تنظیموں کا مقصد ملک بھر کی لڑکیوں اور نوجوان خواتین کی زندگیوں پر دیرپا اثر ڈالنا ہے۔

کاپی رائٹ بزنس ریکارڈر، 2023



>Source link>

>>Join our Facebook Group be part of community. <<

By hassani

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *