لاہور: وزیر اعظم شہباز شریف نے ہفتے کے روز کہا کہ پاکستان ترکی کے زلزلہ متاثرین کے لیے 171,000 خیمے بھیجے گا۔

یہاں ٹینٹ مینوفیکچررز کے ایک وفد سے ملاقات کے دوران انہوں نے کہا کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ جو خیمے ترکی بھیجے جائیں گے وہ بین الاقوامی معیار کے ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ مطلوبہ خیموں کی تفصیلات پر ترکی کے ڈیزاسٹر مینجمنٹ پریذیڈنسی (AFAD) سے مشاورت کی جانی چاہیے۔

وزیراعظم نے خیموں کے معیار کا تعین کرنے کے لیے وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال کی سربراہی میں کمیٹی بھی تشکیل دی۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ترکی کی فوری ضروریات کو پورا کرنے کے لیے خیمے فضائی راستے سے بھیجے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان سے بھیجنے سے پہلے خیموں کے معیار کو یقینی بنانے کے لیے تیسرے فریق کی توثیق کرائی جائے۔

انہوں نے ٹینٹ مینوفیکچررز سے کہا کہ وہ ترکی کے بھائیوں اور بہنوں کے لیے امدادی سرگرمیوں میں بھرپور حصہ لیں اور کم نرخوں پر خیمے فراہم کریں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان شام میں زلزلہ متاثرین کے لیے خوراک، گرم کپڑے اور خشک دودھ بھیج رہا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان کی امدادی ٹیمیں ترکی میں زلزلہ سے متاثرہ علاقوں میں سرگرمیوں میں بھرپور حصہ لے رہی ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان اور ترکی کے درمیان کئی دہائیوں پر محیط دیرینہ تعلقات ہیں، اور اپنی معاشی مشکلات کے باوجود پاکستان ترکی کے بھائیوں اور بہنوں کی دل و جان سے مدد کرے گا۔

وزیراعظم کو بتایا گیا کہ پاکستان کے پاس ترکئی کے زلزلہ متاثرین کے لیے خیمے بنانے کی کافی صلاحیت ہے اور نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) اس سلسلے میں پاکستان ٹینٹ مینوفیکچررز ایسوسی ایشن سے رابطے میں ہے۔

بتایا گیا کہ این ڈی ایم اے کے پاس موسم سرما کے 21 ہزار خیمے ہیں جو مارچ کے پہلے ہفتے میں ہوائی اور سڑک کے ذریعے ترکی پہنچ جائیں گے۔

وزیراعظم شہباز شریف نے ہدایت کی کہ شام میں ترکی میں خیمے اور خوراک اور گرم کپڑوں کی ترسیل کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں۔

اجلاس میں وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال، وزیر مملکت عائشہ غوث پاشا، چیئرمین این ڈی ایم اے لیفٹیننٹ جنرل انعام حیدر ملک، سیکرٹریز اور ترکی اور شام میں پاکستان کے سفیروں نے شرکت کی۔


Source link

By hassani

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *